پیپلز پارٹی کا لاڑکانہ میں چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے حلقے این اے 200 سمیت، ضلع لاڑکانہ، صوبہ سندھ اور پاکستان بھر میں نئے سر سے ڈور ٹو ڈور ویریفکیشن کا مطالبہ

کراچی: لاڑکانہ میں چیئرمین جناب بلاول بھٹو زرداری صاحب کے حلقے این ای 200 میں انتخابی فہرستوں میں مبینہ بے قاعدگيوں کے خلاف جناب تاج حیدر صاحب انچارج سینٹرل الیکشن سیل پاکستان پیپلز پارٹی کی درخواست پر قائم اعلیٰ سطحی انکوائری کمیٹی کی پاکستان پیپلز پارٹی کے ارکان سے صوبائی الیکشن کمشنر کراچی کی آفیس میں میٹنگ.

میٹنگ میں پاکستان پیپلز پارٹی سینٹرل الیکشن سیل کے انچارج جناب تاج حیدر صاحب، کوآرڈینیشن کمیٹی ضلع لاڑکانہ کے میمبر جناب اعجاز احمد لغاری صاحب، ارباب علی سومرو صاحب نے شرکت کی.

میٹنگ میں الیکشن کمیشن کی طرف سے قائم اعلیٰ سطحی انکوائری کمیٹی کے چیئرمین بابر ملک ڈائریکٹر الیکٹرو رولس، ھیڈ آف ڈیٹا نادرا غزالی زاہد، علی اصغر سیال، پرویز احمد کلھوڑو اور دیگر افسران نے شرکت کی.

میٹنگ میں پاکستان پیپلز پارٹی کے ارکان کی طرف سے لاڑکانہ میں چیئرمین جناب بلاول بھٹو زرداری صاحب کے حلقے این ای 200 میں انتخابی فہرستوں میں مبینہ بے قاعدگيوں کے ہزاروں کی تعداد میں دستاویزاتی ثبوت پیش کیے گئے.

اس موقع پر پاکستان پیپلز پارٹی کے ارکان کی طرف سے مطالبہ کیا گیا کے لاڑکانہ میں چیئرمین جناب بلاول بھٹو زرداری صاحب کے حلقے این اے 200 سمیت، ضلع لاڑکانہ، صوبہ سندھ اور پاکستان بھر میں نئے سر سے ڈور ٹو ڈور ویریفکیشن کی جائے، اور لوگوں کے شناختی کارڈ میں دی گئی ایڈریس اور لوگوں کی رہائش کے مطابق ووٹ کا اندراج، ووٹ کی درستگی اور منتقلی کی جائے.

جس پر الیکشن کمیشن کی طرف سے قائم اعلیٰ سطحی انکوائری کمیٹی کے چیئرمین بابر ملک اور میمبران نے 31 مارچ سے پہلے انتخابی فہرستوں درستگی کی یقین دہانی کرائی.

%d bloggers like this: